اٹھائیس ایسے تھے جو فورً ن لیگ کو خیر باد کہنے کو بھی

لاہور(نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے ممبر ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا ہے کہ یہ اس وقت کی بات ہے کہ جب میں وزیر اعلی پنجاب کے ساتھ ترجمان تھا اس وقت مسلم لیگ نون کے 33 ایم پی اے ایسے تھی جو ہمارے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کے ساتھ ملاقات کرتے تھے۔ اور ان میں 28 ایم پی اے ایسی تھی جو فورا ہی مسلم لیگ نون کو چھوڑنا چاہتے تھے۔ لیکن ہمارے وزیراعظم عمران خان صاحب کو یہ بات پسند نہیں تھی۔ورنہ آج وہ ہماری پارٹی کا حصہ ہوتے۔

ایک نجی چینل کے ساتھ گفتگو کرتی ہے ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ انہیں پتہ تھا کہ ان کا بھی یہی سلوک ہوگا جو مسلم لیگ ق کے ایم پی ایز کا ہوا تھا۔ جس وقت میں وزیر اعلیٰ پنجاب کا ترجمان تھا تو اس وقت تینتیس ن لیگ کے ایم پی اے ایسے تھے جو وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بُزدار سے ملاقات کرتے تھے، اور ان میں سے اٹھائیس ایسے تھے جو فورً ن لیگ کو خیر باد کہنے کو بھی تیار تھے۔ عمران خان نہیں چاہتے تھے کہ وہ تحریک انصاف میں شامل ہوں، ورنہ آج وہ بھی پی ٹی آئی کا حصہ ہوتے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کے اراکین اسمبلی نے ملاقات کی ہے۔ اس ملاقات کے دوران سماجی مسائل، ترقیاتی منصوبوں اور منتخب نمائدوں نے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کو مختلف مسائل سے آگاہ کیا۔وزیراعلیٰ سے ملاقات کرنے والوں میں مسلم لیگ ن ارکان میں میاں جلیل احمدشرقپوری، چودھری اشرف علی انصاری شامل ہیں،نشاط احمد ڈاہا، غیاث الدین، اظہر عباس، محمد فیصل خان نیازی بھی ملاقات کرنے والوں میں شامل تھے، پیپلز پارٹی کے رکن پنجاب اسمبلی غضنفر علی بھی اوزیراعلیٰ پنجاب سےملاقات کرنیوالوں میں شامل تھے۔

وزیراعلیٰ سردار عثمان بزدار سے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے اراکین پنجاب اسمبلی کی ملاقات ہوئی ہے، ملاقات میں حلقوں کے مسائل، فلاح عامہ کے منصوبوں اور ترقیاتی سکیموں کے حوالے سے گفتگو کی گئی منتخب نمائندوں نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو اپنے حلقوں کے مسائل سے آگاہ کیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے فرداً فرداً اراکین پنجاب اسمبلی کی تجاویز کو نوٹ کیا اور مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرائی وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ شور مچانے والے عناصر پیچھے رہ گئے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں نیا پاکستان آگے کی جانب بڑھ رہا ہے۔ تنقید کی پرواہ کئے بغیر عوامی خدمت کے مشن کو جاری رکھیں گے۔ عوامی نمائندوں کی عزت میں کمی نہیں آنے دیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارکا مزید کہنا تھا کہ منتخب نمائندوں کے جائز کام ہر صورت ہوں گے۔ کسی کو رکاوٹ نہیں ڈالنے دوں گا۔ وزیراعلیٰ سے ملاقات کرنے والوں میں میاں جلیل احمد شرقپوری، چوہدری اشرف علی، محمد غیاث الدین، اظہر عباس، غضنفر علی خان، محمد فیصل خان نیازی، نشاط احمد خان ڈاھا اور دیگر شامل تھے۔ چیف وہپ رکن پنجاب اسمبلی سید عباس علی شاہ اور طاہر بشیر چیمہ بھی اس موقع پر موجود تھے۔ یاد رہے کہ وزیر اعلی کے ساتھ ملاقات کرنے پر ان ایم پی ایز کو اپنے پارٹی سے شدید کی شدید تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑا اور یہ تک کی پیپلز پارٹی کے غضنفر علی اپنی ہی پارٹی کے بندے نے لوٹا بھی کہا۔ اور اپنے پارٹی سے شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *