ایکسپو سینٹر کراچی میں قرنطینہ سینٹر میں میں رہنے کے دوران کئی تجربات دیکھے۔

کراچی (این نیوز ) کراچی میں کرونا سے مریض تو صحت یاب ہو گیا لیکن اس کی بیوی خوف کی وجہ سے چل بسی ۔تفصیلات کے مطابق کورونا کے ایک مریض اپنے قرنطینہ کا احوال بیان کرتے ہوئے لکھتے اور کچھ یوں لکھتا ہے کہ میں گزشتہ ماہ اس وبا کا شکار ہوا لیکن مجھ جیسے کئی افراد اس وبائی بیماری کو شکست دے کر صحتیاب ہونے میں کامیاب رہے۔

ایکسپو سینٹر کراچی میں قرنطینہ سینٹر میں میں رہنے کے دوران کئی تجربات دیکھے۔ایکسپو سینٹر میں میرے ساتھ ایک ایسا خاندان بھی دیکھاجو کہ کرونا وائرس کے شکار ہونے کی وجہ سے اپنی تمام اہل محلہ نے ان کے ساتھ تعلق ختم کر دیا اور ایک دوسرے کیلئے ایسے اجنبی بن گئی کہ کبھی برسوں میں ان کی ملاقات نہیں ہوئی ہو ۔ایکسپو سینٹر میں سماج سےعلیحدگی کے دوران مجھے اس وقت بہت شدید دکھ ہوا جب وہاں موجود ایک صاحب کی اہلیہ صرف اس خوف سے دنیا سے چلی گئی تھی کہ ان کے شوہر کو کورونا ہو گیا ہے۔ان کی المناک موت کی وجہ ہمارے معاشرے میں کورونا کا پایا جانے والا خوف تھا۔

اپریل اور مئی میں یہ خوف عروج پر رہا لیکن اب جون آنے پر جہاں حکومتی سطح پر نرمی کی جا رہی ہے اس کے بعد لوگوں کا اعتماد بحال ہو رہا ہے۔لیکن اب لوگ بے خوفی کی انتہا پر جا رہے ہیں۔واضح رہے کہ ملک بھر میں اب تک کورونا سے صحتیاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 58 ہزار 437 ہے، گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 5 ہزار 839 نئے کیسز کا اضافہ ہوا ہے۔این سی او سی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پورے ملک کے طول و عرض میں کورونا کے 28 ہزار 117 نئے ٹیسٹس کیے گئے، آزاد کشمیر اور بلوچستان میں کوئی بھی مریض وینٹی لیٹر پر نہیں ہے۔، اس وقت پاکستان میں ٹوٹل ایکٹیو کووڈ کیسز کی تعداد 93 ہزار 348 ہے جبکہ ملک بھر میں کورونا مریضوں کی تعداد 1 لاکھ 54 ہزار 760 پر پہنچ گئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ آزاد کشمیر میں 703 کورونا کے مریض، بلوچستان میں 8 ہزار 437، گلگت بلتستان میں 1 ہزار 164،وفاقی دارلحکومت اسلام آباد میں 9 ہزار 242 ، خیبرپختونخوا میں 19 ہزار 107، پنجاب میں 58 ہزار 239 اور سندھ میں 57 ہزار 868 کورونا کے مریض ہیں۔یاد رہے کرونا کو ہم اس وقت تک شکست ۔نہیں دے سکتے۔جب تک ہم نے احتیاطی تدابیر نہ اپنائیں ہو۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *