رات بھر میں مسجد کی تعمیر کا ایک بہترین اور دلچسپ واقعہ

لاہور کے شاہ عالم چوک میں “مسجد شب بھر“شاہد دنیا کی واحد مسجد ہے جس کو ایک رات میں تعمیر کیا گیا تھا- اس مسجد کی اتنے قلیل وقت میں تعمیر کی وجہ اور واقعہ بھی انتہائی دلچسپ اور ایمان افروز ہے- تاریخ بتاتی ہے کہ انگریزوں کے دور میں اس مقام سے ایک مسافر سے گزر ہوا اور اس نے یہاں نماز ادا کی جبکہ یہ علاقہ اس وقت ہندوؤں کی اکثریت کا حامل تھاا-

جیسے ہی ہندوؤں کو پتہ چلا تو ان سے یہ بات برداشت نہ ہو سکی اور انہوں نے ہنگامہ آرائی شروع کر دیں یہاں تک کہ یہ معاملہ عدالت کو جا پہنچاہندوؤں کا مؤقف تھا کہ اس جگہ پر مندر تعمیر ہوگا جبکہ مسلمان یہاں مسجد تعمیر کرنا چاہتے تھے-اس موقع پر مسلمانوں کے وکیل نے انہیں تجویز دی کہ اگر وہ یہاں صبح فجر سے پہلے مسجد تعمیر کرلیتے ہیں تو کیس کا فیصلہ ان کے حق میں ہوجائے گا- مسلمانوں کی جانب سے اس کیس کی پیروی قائد اعظم محمد علی جناح رحمۃ اللہ علیہ کر رہے تھے- مسلمانوں کو جب اس بات کا پتا چلا تو انہوں نے راتوں رات مسجد بنانے کا فیصلہ کیا۔سارے مسلمانوں نے اپنا سارا سامان مسجد کے تعمیر کے لیے وقف کر دیا۔اور گاما پہلوان کی قیادت میں کام شروع ہوا۔اس موقع پر مسلمان خواتین بھی پیچھے نہ رہے۔اور رات بھر سروں پر پانی لا کر مسجد کی تعمیر میں اہم کردار ادا کیا تھا۔اور اس مسجد کی تعمیر کے بنا پر صبح عدالت نے مسلمانوں کے حق میں فیصلہ سنایا تھا۔ یہ مسجد 1917 میں تعمیر کی گئی اور اس کا نام “مسجد شب بھر“ رکھا گیا- یہ مسجد 3 مرلے کے رقبے پر تعمیر ہے-علامہ اقبال کو جب تیسرے روز اس مسجد کی تعمیر کا پتہ چلا تو آپ یہاں تشریف لائے اور بہت خوش ہوئے اور یہی وہ موقع تھا جب انہوں نے یہ مشہور شعر کہا:مسجد تو بنا دی شب بھر میں ایماں کی حرارت والوں نےمن اپنا پرانا پاپی تھا برسوں میں نمازی بن نہ سکا.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *