شوہر برائے فروخت

ایک ایک بازار میں ایک نئی دوکان کو لگی جہاں پہ لکھا گیا تھا کہ شوہر برائے فروخت دوکان میں شوہروں کو فروخت کیا جاتا تھا جیسے ہی یہ خبر لڑکیوں اور عورتوں تک پہنچ گئی تو وہ دھڑا دھڑ اس دوکان کی طرف آنے لگے دکان میں داخل ہونے سے پہلے کچھ ہدایات لکھی گئی تھی یعنی صرف ایک عورت ایک وقت میں اس دکان میں داخل ہو سکتی ہے اس دکان کے چھ منزلیں ہیں ہر منزل پر شوہر کے اوصاف کے بارے میں یعنی خوبیوں کے بارے میں لکھا ہوگا جتنے مزے اوپر جائیں گے اور نہیں شوہر کے صوفیوں میں اضافہ ہوتا جائے گا اوپر جانے کے بعد کوئی بھی عورت واپس نہیں آئے گی بلکہ اوپر سیڑھیوں کے ذریعے سے باہر کی طرف جائیگی۔

 

ایک خوبصورت لڑکی کو دکان میں داخل ہونے کا موقع ملا۔ پہلی منزل کے دروازے پر لکھا تھا۔اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ‘ لڑکی آگے بڑھ گئی۔دوسری منزل کے دروازہ پر لکھا تھا۔اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ‘ اللہ والے ہیں لڑکی پھر آگے بڑھ گئی۔تیسری منزل کے دروازہ پر لکھا تھا۔” اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ‘ اللہ والے ہیں بچوں کو پسند کرتے ہیں اور خوبصورت بھی ہیں”یہ پڑھ کر لڑکی کچھ دیر کے لئے رک گئی ‘مگر پھریہ سوچ کر کہ چلو ایک منزل اور اوپر جا کر دیکھتے ہیں۔ وہ اوپر چلی گئی۔چوتھی منزل کے دروازہ پر لکھا تھااس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ‘ اللہ والے ہیں بچوں کو پسند کرتے ہیں ‘ خوبصورت ہیں اور گھر کیکاموں میں مدد بھی کرتے ہیں یہ پڑھ کر اس کو غش سا آنے لگا ‘ کیا ایسے بھی مردہیں دنیا میں ؟ وہ سوچنے لگی کہ شوہرخرید لے اور گھر چلی جائے ، مگر اس کا دل نہ مانا اور وہ ایک منزل اوراوپر چل دی۔ وہاں دروازہ پر لکھا تھا۔ اس منزل کے شوہر برسر روزگار ہیں ‘ اللہ والے ہیں بچوں کو پسند کرتے ہیں ‘بیحد خوبصورت ہیں ‘ گھر کی کاموں میں مدد کرتے ہیں اور رومانٹک بھی ہیں اب اس عورت کے اوسان جواب دینے لگے  وہ سوچنے لگی کہایسے مرد سے بہتر بھلا اور کیا ہو سکتاہے مگر اس کا دل پھر بھی نہ مانا اور وہ آخری منزل پر چلیآئی۔ یہاں بورڈ پر لکھا تھا. آپ اس منزل پر آنے والی 3338 ویں خاتوں ہیں  اس منزل پر کوئی بھی شوہر نہیں ہے 150 یہ منزل صرف اس لئے بنائی گئی ہے تا کہ اس بات کا ثبوت دیا جا سکےکہ عورت کو مطمئن کرنا نا ممکن ہے” ہمارے سٹور پر آنے کا شکریہ!۔۔۔۔۔ یہ سیڑھیاں باہر کی طرف جاتی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *