ملزم شفقت نے سب کچھ اگل دیا، تہلکہ خیز انکشافات

لاہور (نیوز ڈیسک) موٹروے کیس کا ملزم وقار الحسن سی آئی اے ماڈل ٹاؤن پو لیس اسٹیشن لاہور میں پیش ہوا۔ جہا ں اس نے صحت جرم سے انکار کر دیا تفصیلات کے مطابق موٹر وے پر متاثرہ خاتون کیس میں نیا موڑ، ملزم خود تھانے پیش ہو گیا ہے۔ لاہور کے تھانہ سی آئی اے ماڈل ٹاون میں ملزم وقار الحسن نے بیان دیا تھا۔

کہ اس کا موٹروے کیس سے کوئی تعلق نہیں میرے نام پر جارسم ہیں جو میرا سالہ استعمال کرتا ہے، ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کو تیار ہوں۔ جبکہ ڈی این اے میچ ہونے کے بعد شفقت نے پولیس کے سامنے اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ اس نے عابد کے ساتھ مل کر اب تک 11 وارداتیں کیں۔ عابدعلی اور وہ ڈکیتی کی غرض سے ہی موٹر وے پر کھڑی خاتون کی گاڑی کے پاس گئے تھے۔ جب انہوں نے لوٹ مار کر لی اور دیکھا کہ کوئی نہیں آ رہا تو انہوں نے خاتون کو گاڑی سے نکالا اور جھاڑیوں میں لے جا کر یہ فعل انجام دیا۔ موٹر وے پر جب جرم کو انجام دیتے ہوئے پولیس پہنچی تو فائرنگ کی آواز سننے کے بعد وہ وہاں سے فرار ہو گئے۔ اس نے بتایا کہ وہ اور عابد دو دنوں تک ایک ساتھ ہی تھے لیکن پھر وہ وہاں سے مفرور ہو گیا اور میں خود لاہور آ گیا اور پھر میں بھی یہاں سے غائب ہو گیا۔ شفقت نے بتایا کہ اسے معلوم نہیں ہے کہ اس وقت عابد کہاں پر ہے شفقت کی عمر 23 سال بتائی جارہی ہے جبکہ اس نے اعتراف کیا ہے کہ اس سے پہلے وہ بہاولنگر میں ملزمان کے ساتھ مل کر وار داتیں کرتے تھے۔ موٹروے کے اس علاقے میں وہ پہلے بھی ڈکیتی کی وارداتیں کر چکے ہیں، دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ وہ عابد کے بہت قریب پہنچ چکے ہیں اور جلد ہی اسے گرفتا کر لیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *