وزیراعظم ہو تو ایسا نیوزی لینڈ کے وزیر صحت نے اپنے غلطی پر لیا بہت بڑا فیصلہ ب تک

ویلنگٹن (این این آئی) جب نیوزی لینڈ نے کرونا وائرس کو کنٹرول کرنے کے لئے لاک ڈان کا فیصلہ کیا تھا۔ تو انہیں دنوں میں نیوزی لینڈ کے وزیر صحت ڈیوڈ کلارک اپنی فیملی کو ساحل پر لے جاکر لوگ ڈاؤن کی قواعد کے خلاف ورزی کی تھی۔ اس عمل کے بعد وہ تنقید کا نشانہ بنے جس کے بعد انہوں نے اپنا استعفیٰ وزیراعظم جسنڈا آرڈرن کو جمع کراتے ہوئے کہا کے اب اس کے بعد کوئی جواز نہیں بنتا کہ میں اپنے عہدے پر فائز رہو۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر میں اب بھی اپنے عہدے پر قائم ہو کر اپنا کام جاری رکھا  تو یہ لاک ڈاؤن سے توجہ ہٹانے کے مترادف ہو گا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق نیوزی لینڈ کے وزیر اعظم نے ان کا استعفیٰ منظور کر لیا ہے۔ یاد رہے کہ اس وقت عالمی وبا کرونا وائرس سے نمٹنے کے حوالے سے نیوزی لینڈ کامیاب ترین ممالک میں شامل ہے۔ آب تک نیوزی لینڈ میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد صرف 1558 ہے۔ جبکہ 28 افراد کی موت واقع ہو چکی ہے۔ نیوزی لینڈ کے وزیر صاحب کلارک نے تمام غلطیوں کو قبول کیا ہے اور اسی وجہ سے انہوں نے اپنا استعفیٰ لیا ہے۔ اللہ تعالی پاکستان کو بھی اس طرح وزیراعظم دیں اور جب غلطی کر بیٹھے تو اس کو قبول بھی کرے اور رات میں استعفیٰ بھی لے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *