پیپلز پارٹی کے 30 سے 35 ناراض ایم پی ایز کا تحریک انصاف سے رابطہ، زرداری خاندان ہل کر رہ گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف نے پہلے بھی سندھ حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے کا پروگرام بنایا تھا جس کا ٹاسک فواد چودھری کو سونپا گیا تھا تاہم اس میں تبدیلی سرکار کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا تھا لیکن اب ایک بڑی خبر نے زرداری اینڈ کمپنی پر بجلیاں گرا دی ہیں۔

 پاکستان تحریک انصاف کراچی کے صدر اور رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کے 30 سے 35 ایم پی ایز ہمارے ساتھ ہیں۔نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے خرم شیر زمان نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے 30 سے 35 رکن صوبائی اسمبلی ناراض ہیں اور وہ ہمارے ساتھ ہیں۔خرم شیر زمان کے مطابق چیف جسٹس نے کہا ہے کہ سندھ حکومت نے کراچی کو گوٹھ میں بدل دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کراچی ہی نہیں اندرون سندھ میں بھی صورتحال بگڑ گئی ہے۔ کراچی سمیت اندرون سندھ میں بھی لوگوں کو مسائل کا سامنا ہے۔سندھ حکومت کے خلاف وفاق میں سازش کرنا ہو تو دو دن کی بات بھی نہیں ہے۔کراچی سے متعلق کوئی غیر آئینی اور قانونی راستہ نہیں اپنایا جائے گا۔خرم شیر زمان نے مزید کہا کہ عمران خان پورے پاکستان کے وزیراعظم ہیں۔عوام وزیراعظم اور ہم سے سوال پوچھتے ہیں کہ کراچی پر توجہ کب دیں گے۔ایک اور بیان میں انہوں نے کہا کہ ہ پورا سندھ ڈوب گیا، سندھ حکومت کہاں ہے وزیر ایرگیشن کے لئے گمشدگی کے اعلانات کئے جانے چاہئے،بارہ سال گزرنے کے باوجود مسائل حل نہیں ہورہے،ہم پاک فوج اور این سی او سی کے مشکور ہیں انکا کام قابل تعریف ہے ۔ خرم شیر زمان  نے کہا کہ مراد علی شاہ کو دادو اور جام شورو میں کیمپ لگانا چاہیے تھا ناکہ ہیلی کاپٹر سے علاقے میں گھوم پھر کر واپس آ جاتے، لوگوں کے لئے راشن کیمپ کی ضرورت ہے، کروڑوں روپے لگانے کے باجود گاج ڈیم تعمیر نہیں ہوسکا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *